بھارت میں مقیم ملکہ ترنم نور جہاں کی پوتی سونیا جہاں کو پاکستان کی یاد ستانے لگی

بالی ووڈ اداکارہ سونیا جہاں کا کہنا ہے کہ انہیں پاکستان اور وہاں کی عوام کا خلوص بہت یاد آتا ہے۔ سونیا جہاں کا تعلق پاکستان سے ہے مگر وہ ایک بھارتی شہری سے شادی کے بعد نئی دہلی میں مقیم ہیں۔ وہ پاکستانی فلم انڈسٹری کے فلمساز شوکت حسین رضوی اور ملکہ ترنم نور جہاں کی پوتی ہیں جب کہ 37 سالہ سونیا کی والدہ فرانسیسی ہیں۔ سونیا جہاں بالی ووڈ میں قسمت آزمائی کرچکی ہیں جس میں ’تاج محل‘ ، ’ کھویا کھویا چاند‘ اور ’مائی نیم از خان‘ جیسی فلمیں شامل ہیں جب کہ 2016 میں وہ پاکستان فلم ’ہومن جہاں‘ میں بھی نظر آئیں۔

سونیا جہاں کا کہنا ہے کہ ’پاکستانی عوام کی سادگی، خلوص اور ثقافت کو بہت یاد کررہی ہوں کیوں وہ اپنی ثقافت پر فخر کرتے ہیں۔‘ انہوں نے کہا کہ میں نے محسوس کیا ہے کہ بھارت میں لوگ ثقافت سے دور ہوتے جارہے ہیں اور بہت زیادہ مغربی اقدار سے متاثر ہیں اور یہی ایک وجہ ہے اپنے ملک کی کمی محسوس ہوتی ہے۔ سونیا جہاں کا کہنا تھا کہ جب میں پاکستان جاتی ہوں وہاں سب شلوار قمیض پہنے ہوتے ہیں اور وہ اس ثقافت پر فخر کرتے ہیں لیکن بھارت میں لوگ بھول گئے ہیں اور اپنا ثقافتی لباس نہیں پہنتے۔

ان کا کہنا ہے کہ ’پاکستان میں رہتے ہوئے دہلی کو یاد کیا ہے کیوں کہ یہ ایک تیز رفتار شہر ہے جس میں زیادہ لوگ اور زیادہ اچھے مقامات ہیں‘۔ سونیا جہاں شادی شدہ زندگی سے بہت خوش ہیں اور ان کے دو بچے نور اور نروانا ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ میں اپنے بچوں کے ساتھ زیادہ سے زیادہ وقت گزارنا چاہتی ہوں اور کوشش کرتی ہوں کہ مصروفیات کے باوجود زیادہ سے زیادہ ان کے ساتھ گزاروں۔ انہوں نے کہا کہ ان کی ترجیح ہمیشہ ہی خاندان رہی ہے اور وہ سادہ زندگی گزارنے میں خوشی محسوس کرتی ہیں۔