سیاستدان کی زیادتی پرمبنی نئی پاکستانی فلم ’’ورنہ‘‘ نے ریکارڈ توڑ دیئے، بھارتی فلموں کو پیچھے چھوڑ دیا

معروف اداکارہ ماہرہ خان نے بالی ووڈ کے بعد لالی ووڈ میں بھی اپنی دھاک بٹھا دی ، فلم ’’ ورنہ ‘‘ نے تین کروڑ روپے کا بزنس کر کے پاکستان میں زیر نمائش بھارتی فلموں کو مات دیدی ۔ ذرائع کے مطابق ہدایتکار شعیب منصور کی فلم ’’ ورنہ ‘‘ ریلیز کے بعد اب تک تقریباً 3 کروڑ روپے کا ریکارڈ بزنس حاصل کرنے میں کامیاب ہو چکی ہے ۔ فلم میں ماہرہ خان نے اپنا کردار بڑا خوبصورتی سے ادا کیا ہے جس کو فلم بینوں کی جانب سے سراہاجا رہا ہے ۔ فلمی حلقوں کی جانب سے فلم کی کامیابی پر مسرت کا اظہار کیا جا رہا ہے کہ پاکستانی فلم ’’ ورنہ ‘‘ نے بھارتی فلموں کے مقابلے میں زیادہ بزنس کر کے ثابت کر دیا ہے کہ ہم کسی سے کم نہیں ۔

اس حوالے سے اداکار ہمایوں سعید ، احسن خان ، فیصل قریشی ، نیلم منیر ، عائشہ عمر ، حنا دلپذیر ،بشریٰ انصاری ، مہوش حیات اور نعمان اعجاز سمیت دیگراداکاروں نے کہا کہ ہدایتکار شعیب منصور کی فلم کی کامیابی اصل میں پاکستان فلم انڈسٹری کی کامیابی ہے ، شعیب منصور خوش قسمت ہدایتکار ہیں جنہوں نے بطور ہدایتکار تین فلمیں بنائیں اور تینوں کی سپر ہٹ ثابت ہوئیں اور اب ان کی فلم ’’ ورنہ ‘‘ نے کامیابی کے نئے ریکارڈ بنانے شروع کر دیئے جس کی ہمیں خوشی ہے کیونکہ بنیادی طور پر یہ ہم سب اداکاروں کی کامیابی ہے اور ہمیں امید ہے کہ مستقبل میں ایسی اچھی فلمیں بنائی جائیں گی جس سے صرف سینما گھروں میں پاکستانی فلمیں ہی ریلیز ہوں گی ۔تاہم اس حوالے سے ابھی کچھ وقت ضرور لگے گا ۔ انہوں نے فلم کی شاندار کامیابی پر ہدایتکار شعیب منصور اور فلم کی تمام ٹیم کو مبارکباد کا پیغام دیتے ہوئے ان کیلئے نیک خواہشات کا اظہار کیا ہے۔ فلم کی کہانی سیاستدان کے بیٹے کی زیادتی اور پھر اس زیادتی کے خلاف متاثرہ لڑکی کی جدوجہد پر مبنی ہے ۔