عتیقہ اوڈھو سے شراب برآمد گی کا کیس، سپریم کورٹ نے فیصلہ سنا دیا

سپریم کورٹ نے اداکارہ عتیقہ اوڈھو کے خلاف شراب برآمدگی کیس میں ٹرائل کورٹ کو کیس کی سماعت کرنے کی اجازت دیدی ہے مگر اسے کیس کا حتمی فیصلہ سنانے سے روکتے ہوئے مقدمہ کی سماعت 10 اکتوبر تک ملتوی کر دی ہے۔ گزشتہ روز جسٹس اعجاز افضل خان کی سربراہی میں جسٹس قاضی عیسیٰ فائز اور جسٹس اعجاز الاحسن پر مشتمل تین رکنی بینچ نے سماعت کی۔

عتیقہ اوڈھو کے وکیل ایڈووکیٹ علی ظفر نے اپنے دلائل میں موقف اختیار کیا کہ مقدمہ میں نامزدتمام (8) گواہان کے بیانات ریکارڈ ہو چکے ہیں اور صرف عتیقہ اوڈھو کا بیان ریکارڈ نہیں ہوا ہے، ہم نے ماتحت عدالتوں میں اپیلیں دائر کی مگر ہماری اپیلیں مسترد ہوئیں مگر وجہ نہیں بتائی گئی اس پر عدالت نے استفسار کیا آپ کا مطلب ہے ماتحت عدالتوں نے اپیلیں مسترد کرنے کا صرف فیصلہ جاری کیا، اپنے آرڈرز میں اور کچھ نہیں لکھا۔