4 بچوں کی ماں پنجاب کے اہم شہر میں کم عمر آشنا سمیت قتل ۔۔۔۔ دونوں کیا انوکھا طریقہ استعمال کرکے ملاقاتیں کر رہے تھے ؟ شرمناک انکشاف

لاہور (ویب ڈیسک) چار بچوں کی ماں 27 سالہ خاتون کو آشنا سمیت قتل کر دیا گیا ، مقتولہ کا خاوند عرصہ تین چار سال قبل بیوی بچوں کو چھوڑ کر چلا گیا تھا اور مقتولہ اپنے بچوں کے ساتھ اکیلی رہتی تھی۔ تفصیلات کے مطابق مقتولہ مظفر آباد کی رہائشی اور مقتول کاشف ایک بیٹے کا باپ اور ماچھیوال کے چک نمبر 1/W.B کارہائشی تھا۔ پولیس تھانہ نشاط آباد نے نامعلوم ملزمان کے خلاف مقدمہ درج کر کے تفتیش کا آغاز کر دیا۔

تفصیل کے مطابق چک نمبر1/W.Bکے زمیندار شرافت علی ہاشمی کا نوجوان شادی شدہ بیٹا محمد کاشف لاہور میں گاڑی چلاتا تھا اور پندرہ دن قبل لاہور سے فیصل آباد میں رہائش اختیار کر لی۔ ایک روز قبل وہ اپنی بیوی اور بچے کو اپنے سسرال چھوڑ آیا اور مقتولہ خورشید اپنے بچوں کو میکے چھوڑ آئی گھر میں اکیلی ہونے کی وجہ سے اپنے آشنا کو بھی اپنے پاس بلا لیا اور رات کے کسی پہر نامعلوم ملزمان نے انہیں نشہ آور چیز کھلا کر بے ہوش ہونے کے بعد گلا دبا کر موت کے گھاٹ اتار دیا۔ نماز جنازہ کے بعد مقتول محمد کاشف کو اس کے آبائی گائوں پکھی موڑ مقامی قبرستان میں سپرد خاک کر دیا گیا۔

دوسری جانب ایک اور خبر کے مطابق جناح ہسپتال میں زیر علاج 22 سالہ لڑکی دم توڑ گئی متوفیہ نے گھریلو حالات سے دلبراشتہ ہو کر زہر پی لیا تھا تفصیلات کے مطابق دو روز قبل کوٹ رادھا کشن کی رہائشی 22 سالہ رضیہ بی بی کو تشویشناک حالت میں جناح ہسپتال لایا گیا تھا جہاں وہ گزشتہ روز دم توڑ گئی ۔ورثا نے پولیس کو بتایا کہ رضیہ نے گھریلو حالات سے دلبرداشتہ ہو کر زہر نگل لیا تھا بعد ازاں پولیس نے پورسٹمارٹم سے انکار پر ضروری قانونی کاروائی کے بعد تدفین کے لاش ورثا کے حوالے کر دی۔