وزیراعظم عمران خان نے استعفے کی دھمکی دے دی بڑا دعوی سامنے آگیا ، مستعفی ہو نے کی وجہ بھی بتا دی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں بات کرتے ہوئے معروف صحافی و تجزیہ کار نجم سیٹھی نے کہا کہ وزیراعظم عمران خان ایک اجلاس میں تھے جب انہیں اطلاع موصول ہوئی کہ شہباز شریف کی ضمانت منظور ہو گئی ہے۔ یہ بات سُن کر وزیراعظم عمران خان کافی زیادہ اپ سیٹ ہو گئے تھے۔ اُس کے بعد اب خبر آئی کہ نواز شریف کی بھی ضمانت منظور ہوگئی ہے۔اس وقت بھی وزیراعظم عمران خان کابینہ اجلاس میں تھے۔ نواز شریف کی ضمانت منظوری کی خبر کے بعد عمران خان زیادہ اپ سیٹ ہوگئے ہیں اور انہوں نے اپنا ایک ذاتی مؤقف بنا لیا ہے کہ انہوں نے نہ تو ان دونوں بھائیوں کو چھوڑنا ہے اور نہ ہی انہوں نے شہباز شریف سے ملاقات کرنی ہے۔

عمران خان کے اس مؤقف کی وجہ سے انہیں کافی دشواریوں اور مشکلات کا سامنا کرنا پڑ رہا ہے۔نجم سیٹھی نے کہا کہ عمران خان نے ایک بار نہیں دوسری یا تیسری مرتبہ دھمکی بھی دے ڈالی ہے کہ اگر آپ نے میری بات نہیں ماننی اور جیسے میں چاہتا ہوں مجھے ویسے حکومت نہیں چلانے دینی تو ٹھیک ہے پھر آپ ہی حکومت چلا لیں۔ اس سے آگے میں کچھ نہیں بتا سکتا کہ انہوں نے کس کو کیا کہا ، البتہ انہوں نے دونوں بھائیوں کی ضمانت ہونے پر ناراضی کا اظہار کیا ہے اور دھمکی بھی دی ہے۔بے شک عمران خان نے ناراضی کا اظہار بلا واسطہ یا بالواسطہ کیا ہے لیکن انہوں نے کیا ضرور ہے۔ انہوں نے کہا کہ دوسری جگہ بھی پیغام پہنچ گیا ہے کہ وزیراعظم عمران خان ناراضی ظاہر کر رہے ہیں۔