ڈالر کی قیمت میں اضافہ کیوں ہوا ؟ چیف جسٹس سوموٹو نوٹس لے کر جے آئی ٹی بنائیں ، ن لیگی رہنما ملک احمد خان کا احمقانہ مطالبہ

پاکستان مسلم لیگ ن کے رہنما اور سابق حکومت کے ترجمان ملک محمد احمد خان نے کہا کہ پاکستان تحریک انصاف کی حکومت جنوبی پنجاب صوبہ نہیں بنا پائے گی ، روپے کی قدرمیں کمی اسٹیٹ بینک کے کنٹرول میں ہے ، وزیراعظم کی غیر سنجیدگی پر سو موٹو نوٹس لینا چاہیے۔ ایک نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے مسلم لیگ ن کے رہنما ملک محمد احمد خان کا کہنا تھا کہ وزیر اعظم عمران خان غیر منتخب اور غیر سیاسی لوگوں کے نرغے میں ہیں جنہیں عوامی مسائل کی کوئی پروا نہیں ہے ۔

پاکستان تحریک انصاف کی حکومت کے مسائل غلط تجاویز دینے والوں کی وجہ سے ہیں ۔ انہوں نے کہا کہ ڈالر کا اتنا اوپر جانا اور پھر واپس آنا کسی صورت بھی درست نہیں ہے ، وزیر اعظم اور وزیر خزانہ کے بیانات سے زیادہ کریمنل ایکٹ کوئی اور نہیں ہو سکتا ، اگرواقعی کسی چیز پر جے آئی ٹی بننی چاہئے تو وہ ڈالر کی قیمت میں 10 روپے اضافے اور کمی پر بننی چاہئے اور چیف جسٹس کو وزیراعظم کی غیر سنجیدگی پر سوموٹو نوٹس لینا چاہیے ۔

ہمیں تو لگتا ہے کہ بڑے بڑے منی لانڈر حکومتی صفوں میں گھس گئے ہیں اور وہ بڑے پیسے بنا رہے ہیں ۔ روپے کے مقابلے میں غیر معمولی طور پر ڈالر کی قیمت کا 10 روپے بڑھنا پاکستان کی تاریخ کا سب سے بڑا اضافہ ہے اور پھر اس کا گرنا بڑا ہی تشویش ناک ہے ۔ ملک محمد احمد خان کا کہنا تھا کہ پتا چلنا چاہئے کہ پاکستان کی اکانومی کے ساتھ کون سا کھیل کھیلا جا رہا ہے ؟ ہمارا مطالبہ ہے کہ وزیر اعظم اور وزیر خزانہ کے بیانات اور غیر سنجیدگی پر جے آئی ٹی بنائی جائے اور چیف جسٹس اس پر سو موٹو نوٹس لیں ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں