امریکہ نے ریمنڈ ڈیوس کے بدلے عافیہ صدیقی کی واپسی کی پیشکش کی تھی لیکن حکومت نے ” کچھ اور“ لینے کا فیصلہ کرلیا ، بہن فوزیہ صدیقی کا انکشاف

امریکہ میں قید ڈاکٹر عافیہ کی بہن فوزیہ صدیقی نے انکشاف کیا ہے کہ امریکہ نے ریمنڈ ڈیوس اور بریگیڈئیر برگ ڈیل کے بدلے عافیہ صدیقی کو پاکستا ن کو دینے کی پیشکش کی تھی لیکن حکومت نے کچھ اور لینے کا فیصلہ کرلیا ۔ ایک نجی ٹی وی چینل سے بات کرتے ہوئے فوزیہ صدیقی نے انکشاف کیا کہ امریکی پیشکش کے باوجود پاکستان نے عافیہ کی جگہ ” کچھ اور“ لینے کا فیصلہ کیا جبکہ عافیہ کوامریکی صدر کی طرف سے صدارتی معافی کے آپشن کے وقت بھی پاکستان نے سستی دکھائی لیکن اب 100 فیصد امید ہے کہ ڈاکٹر عافیہ جلد پاکستان آ رہی ہیں ۔

ان کا کہنا تھا کہ وزیراعظم عمران خان 2003 سے اس معاملے پر ان کے ساتھ ہیں ، وہ کہہ چکے ہیں کہ عافیہ کو تنہا چھوڑنے والے حکومت کرنے کا کوئی حق نہیں رکھتے ، ڈاکٹر فوزیہ نے مزید کہا کہ عمران خان آمرانہ دور میں بھی عافیہ صدیقی کے ساتھ کھڑے رہے جب دوسرے سیا سی رہنما اس وقت خوفزدہ تھے ، اب حکومت کی جانب سے ڈاکٹر عافیہ کے معاملے پر پیش رفت کا بتایا گیا ہے جس کے بعد بہت زیادہ امید ہے کہ ڈاکٹر عافیہ کو رہا کردیا جائے گا ۔

اپنا تبصرہ بھیجیں