سعودی عرب نے پیسوں کے بدلے جو مانگا پاکستان نہیں دے سکتا تھا ، حکومت کو مجبوری کے عالم میں آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا ، سینئر صحافی خاور گھمن

صحافی خاور گھمن نے کہا ہے کہ مفت میں پیسے کوئی نہیں دیتا ، سعودی عرب نے پیسوں کے بدلے جو مانگا پاکستان نہیں دے سکتا تھا ، حکومت کو مجبوری کے عالم میں آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا ۔ ایک نجی نیوز چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے خاور گھمن نے کہا کہ عمران خان نے کہا تھا کہ سعودی عرب نے پیسے دینے ہیں تو پیسے کوئی مفت نہیں دیتا ، سعودی عرب نے پیسوں کے بدلے کچھ مانگا جو پاکستان نہیں دے سکتا ۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کو مجبوری کے عالم میں آئی ایم ایف کے پاس جانا پڑا ۔

چارٹرڈ آف اکا نومی اگر 2013 میں کیا جاتا تو اس کی سمجھ آتی ، لیکن مسلم لیگ ن کو پتہ تھا کہ ہم جو ملک چھوڑ کرجا رہے ہیں اس کے پلے کچھ نہیں ہے ۔ میڈیا کو پرانی حکومتوں کو چھوڑنا چاہئے اور عوام کو یہ بتانا چاہئے کہ نئی حکومت یہ کرنے جا رہی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب یونیورسٹی کے سابق وائس چانسلر ڈاکٹر مجاہد کامران نے شدید قسم کی بد انتظامی کی ہے اور ہر ڈیپارٹمنٹ میں بے ضابطگی کی گئی اور وہاں پر مارکیٹ بنوا دی گئی ، ان پر جتنے بھی الزامات ہیں ان کو جھٹلایا نہیں جا سکتا ۔