نارووال ورکرز کنونشن کے دوران وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال کو ایک شخص نے جوتا دے مارا

پاکستان مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما اور وفاقی وزیرداخلہ احسن اقبال پر تقریب میں موجود ایک شخص نے جوتا پھینک دیا ۔ تفصیلات کے مطابق نارووال میں ورکرز کنونشن سے احسن اقبال خطاب کررہے تھے اسی دوران تقریب کے شرکا میں موجود ایک شخص نے اپنا جوتا اتارا اور بلا جھجک وزیر داخلہ کی جانب پھینک دیا جو ان کے ہاتھ پر آ کر لگا ۔تاہم پولیس نے فوری طور پر کارروائی کرتے ہوئے اس شخص کو گرفتار کر لیا اور تشدد کا نشانہ بھی بنایا ، اس موقع پر تقریب میں شدید بد نظمی بھی دیکھنے میں آئی ، وفاقی وزیر داخلہ کو جوتا مارنے والے شخص کی شناخت ’’بلال حارث ‘‘ کے نام سے ہوئی ہے ۔ نجی ٹی وی کا کہنا تھا کہ وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال معمول کے مطابق ہفتہ اور اتوار کو اپنے حلقے میں وقت گزارتے اور لوگوں سے ملتے ہیں ، آج بھی وہ اپنے حلقے میں ہونے والے ورکرز کنونشن میں شریک تھے جہاں یہ نا خوشگوار واقعہ پیش آیا۔

واضح رہے کہ سابق امریکی صدر جارج ڈبلیو بش سے شروع ہونے والے ” جوتا کلب“ کے ارکان کی تعداد میں دن بدن اضافہ ہوتا جا رہا ہے ۔ اس کلب میں دنیا بھر کے مختلف سیاستدان شامل ہو چکے ہیں لیکن اب وفاقی وزیر داخلہ احسن اقبال بھی جوتا کھا کر اس کلب کے باقاعدہ ممبر بن چکے ہیں ۔ اس سے قبل ’’ جوتا کلب ‘‘ کے عالمی ممبران میں سابق امریکی صدر جارج ڈبلیو بش ، برطانوی وزیر اعظم ڈیوڈ کیمرون اور ٹونی بلیئر ، سابق امریکی وزیر خارجہ ہیلری کلنٹن ، آسٹریلیا کے سابق صدر جان ہارورڈ ، چین کے سابق وزیر اعظم وین جیا باؤ ، ترک وزیر اعظم رجب طیب اردگان ، یونان کے صدر جارج پاپنڈرو ، سابق بھارتی وزیر اعظم ڈاکٹر منموہن سنگھ ، انڈین کانگریس کے رہنما راہول گاندھی ، عام آدمی پارٹی کے سربراہ ، اروند کیجریوال ، بھارتی ریاست بہار کے وزیر اعلیٰ نتیش کمار ، بھارتی ریاست ہریانہ کے وزیر اعلیٰ بھوپندر سنگھ ، لال کرشن ایڈوانی ، سوڈان کے صدر عمر البشیر جس وقت وزیر اعظم تھے۔

مقبوضہ کشمیر کے سابق وزیر اعلیٰ عمر عبد اللہ ، افغانستان کے سابق وزیر اعظم گلبدین حکمت یار ، ایران کے سابق صدر محمود احمدی نژاد ، سابق پاکستانی صدور جنرل (ر) پرویز مشرف ، آصف علی زرداری ، سابق وزیر اعلیٰ سندھ ارباب غلام رحیم ، وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف ، عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید احمد ، سابق وفاقی وزیر اطلاعات سینیٹر پرویز رشید سمیت دنیا بھر کے درجنوں اہم ارکان شامل ہیں اور اس ’’عالمی کلب ‘‘ کی ممبر شپ حاصل کرنے کی ’’سعادت‘‘ حاصل کر چکے ہیں ۔ یاد رہے کہ سابق پاکستانی صدر جنرل (ر) پرویز مشرف ، سابق ایرانی صدر محمود احمدی نژاد اور آسٹریلیا کےسابق صدر جان ہارورڈ سمیت کئی ممبران ایسے بھی ہیں جو دو بار اس کلب کے ممبر بننے کا اعزاز اپنے پاس رکھتے ہیں ۔