مفتی قوی رویت ہلال کمیٹی کے ممبر نہیں ہیں

اسلام آباد (اُردو نیوز) رویت ہلال کمیٹی کے چئیرمین مولانا عبد الخبیر آزاد کا کہنا ہے کہ مفتی قوی رویت ہلال کمیٹی کے ممبر نہیں ہیں۔ انہوں نے ملتان میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ عمران خان نے پوری دنیا میں امت مسلمہ کی نمائندگی کی اور ہرجگہ مسلمانوں کا مقدمہ لڑا۔ مولانا عبد الخبیر آزاد نے کہا کہ اﷲ تعالی نے عمران خان جیسا عظیم لیڈر پاکستان کو دیا۔

چاند کے معاملے پر فنی معاونت ہر کسی سے لیں گے مگر فیصلے شرعی اور شہادتوں پر ہی ہوں گے۔ اُنہوں نے کہا کہ فواد چوہدری کے ساتھ بھی ملاقات ہوئی ہے، سب کے ساتھ مل کر چلیں گے۔ چیئرمین رویت ہلال کمیٹی کا کہنا تھا کہ پاکستان کو مذہبی ہم آہنگی اور آپسی اتفاق کی ضرورت ہے، 50 سال سے مذہبی ہم آہنگی کے لیے میرا خاندان کام کر رہا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں مولانا عبدالخبیر آزاد نے کہا کہ مفتی قوی پرعلما بات کریں گے اور وہ رویت ہلال کمیٹی کے ممبر نہیں۔

ہمارا مشن امن و محبت ہے اور ہم سب کو ساتھ لے کر چلیں گے ۔ خیال رہے کہ معروف ٹک ٹاکر حریم شاہ نے حال ہی میں مفتی عبد القوی کی کئی ویڈیوز جاری کیں جن میں مفتی عبد القوی کو غیر مناسب گفتگو کرتے ہوئے دیکھا گیا ، ایک ویڈیو میں تو حریم شاہ کے ساتھ مفتی عبد القوی نے نہایت نازیبا گفتگو بھی کی جس پر انہیں سخت تنقید کا نشانہ بھی بنایا گیا۔ حریم شاہ نے مفتی عبد القوی کو تھپڑ مارنے کی وڈیو بھی جاری کی جو دیکھتے ہی دیکھتے سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی تھی۔

مفتی عبد القوی اپنے بیانات یا ویڈیوز کی وج سے اکثر و بیشتر ہی خبروں کی زینت بنے رہتے ہیں۔ مفتی عبد القوی کی حالیہ ویڈیوز منظر عام پر آنے پر ان کے اہل خانہ نے انہیں گھر کے ایک کمرے میں بند کر دیا ہے جبکہ ان سے موبائل فون بھی چھین لیا گیا ہے۔ مفتی عبد القوی کے اہل خانہ نے مطالبہ کیا ہے کہ انہیں ”مفتی” نہیں بلکہ صرف عبد القوی کہا جائے۔