لاہور پولیس کا ناکوں پر ڈنڈا بردار فورس تعینات کرنے کا فیصلہ

لاہور (اردو نیوز ) لاہور پولیس نے ناکوں پر ڈنڈا بردار فورس تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔ پولیس نے اعلان کیا ہے کہ عوام کی غیر سنجیدگی اور غیر ضروری طور پر گھر سے نکلنے والوں کے ساتھ آہنی ہاتھوں سے نمٹیں گے۔ پولیس ذرائع کے مطابق کورونا وائرس کے بچاؤ کے لیے حکومتی اقدامات کو شہری غیر سنجیدگی سے لیتے ہوئے سڑکوں ہر مٹر گشت کرتے ہوئے دیکھائی دیئے جس پر لاہور پولیس نے ایسے افراد سے نمٹنے کے لیے اینٹی رائٹ فورس کے اہلکار سڑکوں پر تعینات کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

سی سی پی او لاہور کے مطابق گھروں سے باہر غیر ضروری طور پر نکلنے والوں کے خلاف قانونی کاروائیاں تیز کی جا رہی ہیں۔سی سی پی او نے بتایا کہ شہر میں کرونا وائرس سے متاثرہ افراد کی تعداد روز بروز بڑھ رہی ہے اگر عوام نے سنجیدگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے گھروں میں نہ رہے تو حالت مزید بگڑ سکتی ہے۔ دوسری جانب لاہور ہائیکورٹ نے بڑا حکم جاری کرتے ہوئے تمام خواتین ، کم عمر اور معمولی جرائم میں ملوث قیدیوں کو رہا کر دیا ہے۔

ڈی جی ڈائریکٹوریٹ آف ڈسٹرکٹ جوڈیشری نے صوبے بھر کے تمام سیشن ججز کو مراسلہ جاری کردیا ہے۔ مراسلہ میں ہدایت کی گئی ہے کہ کورونا وائرس سے بچآ کے پیش نظر متعلقہ سپریٹنڈنٹس جیلولوں میں معمولی جرائم میں قید ملزموں کو ضمانت پر رہائی کیلئے درخواست دائر کریں۔ اور ضمانتیں ترجیحی بنیادوں پر منظور کی جائیں ۔ 7 سال سے زائد قید والے ملزموں کی ضمانت کی درخواستیں برائےراس لاہور ہائیکورٹ میں دائر کی جائیں گی۔ لاہور ہائیکورٹ نے حکم دیا ہے کہ رہا ہونے والے افراد مکمل تنہائی میں رہیں۔ اس حوالے سے پولیس کو ہدایت دی گئی ہیں کہ ڈی پی اوز ان قیدیوں کی عام افراد سے دوری پر نظر رکھیں گے۔ دہشت گردی کے مقدمے کے تحت قید افراد پر اس حکم کا اطلاق نہیں کیا جائے گا۔