بدھ کے روز اسلام آباد میں پیش آیا فضائی حادثہ پاک فضائیہ کیلئے بڑا نقصان

اسلام آباد (اردونیوز) بدھ کے روز اسلام آباد میں پیش آیا فضائی حادثہ پاک فضائیہ کیلئے بڑا نقصان، 1986 سے لے کر آج تک پاکستان کل مختلف حادثات میں کل 10 ایف 16 طیاروں سے محروم ہو چکا۔ تفصیلات کے مطابق آج بدھ کے روز وفاقی دارالحکومت اسلام آباد میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا جہاں پاک فضائیہ کا طیارہ گر کرتباہ ہو گیا۔

ترجمان پاک فضائیہ نے بھی طیارہ گرنے کی تصدیق کی۔پاک فضائیہ کے ترجمان نے تصدیق کی کہ تیارہ ایف-16 تھا۔اس افسوسناک واقعے میں پاک فضائیہ کے ونگ کمانڈر نعمان اکرم بھی شہید ہو گئے۔ پاک فضائیہ کے ایف طیارے کے تباہ ہونے کے بعد کچھ اعداد و شمار سامنے آئے ہیں۔ بتایا گیا ہے کہ ایف جنگی طیارے پاک فضائیہ کے پاس موجود سب سے جدید جنگی طیارہ ہے جو پاکستان کے دفاع کیلئے انتہائی اہم ہے۔

پاکستان کے پاس موجود ایف جنگی طیاروں میں بیشتر امریکا سے حاصل کیے گئے ہیں۔ ایف 16 جنگی طیارہ چوتھی جنریشن کا مہنگا ترین جنگی طیارہ ہے۔ بتایا گیا ہے کہ 80 کی دہائی میں ایف 16 طیاروں کی خریداری کے پروگرام کے آغاز کے بعد سے پاکستان کے 10 ایف 16 جنگی طیارے مختلف حادثات کا شکار ہو کر تباہ ہو چکے ہیں۔ پاکستان میں ایف 16 طیارے کا پہلا حادثہ 18 دسمبر 1986 کو سرگودھا کے قریب پیش آیا تھا جس کے بعد سے آج تک ملک میں ایف 16 طیاروں کے 10 حادثات رونما ہو چکے ہیں۔

پاکستان میں ایف 16 کے 10 حادثات میں پاک فضائیہ کے 4 پائلٹس بھی جام شہادت نوش کر چکے ہیں۔ تاہم یہاں یہ بات واضح رہے کہ یہ معلوم نہیں کہ پاکستان کے پاس اس وقت کل کتنے ایف 16 طیارے موجود ہیں۔ جبکہ تازہ ترین واقعے کے حوالے سے بتایا گیا ہے کہ بدھ کے روز رونما ہونے والے حادثے کی تحقیقات کا آغاز کر دیا گیا ہے۔ تحقیقات پاک فضائیہ کی جانب سے کی جا رہی ہے۔