پاک فضائیہ ایف 16 طیارہ حادثہ، عینی شاہدین نے آنکھوں دیکھا حال بتا دیا

اسلام آباد (اردونیوز) آج اسلام آباد میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا جہاں پاک فضائیہ کا طیارہ گر کرتباہ ہو گیا۔ترجمان پاک فضائیہ نے بھی طیارہ گرنے کی تصدیق کر دی ہے۔پاک فضائیہ کے ترجمان نے تصدیق کی ہے کہ تیارہ ایف-16 تھا۔اس افسوسناک واقعے میں پاک فضائیہ کے ونگ کمانڈر نعمان اکرم بھی شہید ہو گئے۔اسلام آباد کے رہائشیوں کے لیے مارچ کے مہینے میں شہر کی فضاؤں میں جیٹ طیاروں کی آوازیں اور اڑان کوئی غیر معموملی بات نہیں۔

11 مارچ کی صبح اسلام آباد کےمعروف تجارتی مرکز آبپارہ میں دکاندار جب گاہکوں سے بھاؤ تاؤ کر رہے تھے تو اس دوران جنگی جہازوں کی آوازیں فضامیں گونجیں۔اردو نیوز کی رپورٹ کے مطابق ایک شہری نے بتایا کہ جب جہاز فضا میں بلند ہوا تو ہم آبپارہ مارکیٹ سے دیکھ رہے تھے۔ پھر وہ سیدھا نیچے کی جانب آیا۔ہم خوفزدہ ہو گئے کیونکہ وہ نیچے آ رہا تھا۔پھر ہم نے جہاز کو واپس اوپر اٹھتے نہیں دیکھا۔

چند ہی سیکنڈ میں زمین ہلی اور جس جگہ دھواں اٹھتا دکھائی دیا تو ہم نے جائے حادثے کی طرف دوڑ لگا دی۔ایک اور عینی شاہد کے مطابق جب وہ حادثے کی جگہ پہنچے تو علاقے میں ہائی ٹرانسمیشن لائن گری ہوئی تھی،درخت اور بجلی کے کھمبے ٹوٹ ہوئے تھے۔طیاروے کے ٹکڑوں سے دھواں اُٹھ رہا تھا۔خیال رہے کہ پاک فضائیہ کے ونگ کمانڈر نعمان اکرم نے یوم پاکستان کی تقریب کی تیاریوں کے حوالے سے کی جانے والی ریہرسل کے دوران جام شہادت نوش کیا۔

سوشل میڈیا پر بھی انہیں خراج تحسین پیش کیا جا رہا ہے، ۔ عینی شاہدین نے بتایا ہے کہ وہ کافی دیر سے اس طیارے کو دیکھ رہے تھے ، پائلٹ کبھی آسمان کی بلندیوں پر چلا جاتا تھا تو کبھی زمین کے قریب واپس آجاتا تھا۔ منظر عام پر آنے والی ویڈیو میں دیکھا گیا کہ پاک فضائیہ کا طیارہ پہلے آسمان کی بلندیوں پر موجود تھا پھر ایک دم سے زمین کی طرف آنا شروع کر دیا جس کے بعد ممکن طور پر پائلٹ سے طیارہ کنٹرول نہیں ہوا اور طیارہ شکرپڑیاں کے مقام پر گر کر تباہ ہو گیا۔