لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کی ضمانت منظور کر لی

لاہور (اُردو نیوز) لاہور ہائیکورٹ نے حمزہ شہباز کی ضمانت منطور کر لی۔تفصیلات کے مطابق حمزہ شہباز نے رمضان شوگر ملز ریفرنس میں ضمانت پر رہائی کیلئے لاہور ہائیکورٹ سے رجوع کیا تھا۔حمزہ شہباز نے امجد پرویز ایڈووکیٹ کی وساطت سے ضمانت کی درخواست دائر کی۔درخواست میں چیئرمین نیب، ڈی جی نیب اور تفتیشی افسر کو فریق بنایا گیا تجا،درخواست میں موقف اختیار کیا گیا کہ رمضان شوگر ملز کے معاملے پر متعدد بار انکوائری کی مگرکوئی ثبوت نہیں ملا، تحصیل بھوانہ میں نالہ عوامی مفاد میں بنایا گیا تھا

جس کی صوبائی کابینہ اور صوبائی اسمبلی نے تعمیر کی منظوری دی تھی،درخواست میں کہا گیا کہ حمزہ شہباز کیخلاف کوئی ثبوت موجود نہیں،رمضان شوگر ملز میں شریک ملزم شہباز شریف کو پہلے ہی ضمانت پر رہا کیا جا چکا ہے،رمضان شوگر ملز ریفرنس میں فرد جرم عائد ہونے کے بعد حمزہ شہباز کے وارنٹ گرفتاری جاری کئے گئے جو غیر قانونی عمل ہے،استدعا ہے کہ حمزہ شہباز کو ضمانت پر رہا کرنے کا حکم دیاجائے۔

آج لاہور ہائیکورٹ میں رمضان شوگر ملز کیس کی سماعت ہوئی۔جسٹس مظاہر علی نقوی کی سربراہی میں دو رکنی بنچ نے درخواست پر سماعت کی۔سماعت کے دوران نیب پراسیکیوٹر نے بتایا کہ رمضان شوگر ملز کے 7 ڈائیریکٹر ہیں۔عدالت کے استفسار پر نیب پراسیکیوٹر ڈائیرکٹرز کے نام نہ بتا سکے۔جس پر عدالت نے کہا کہ لگتا ہے آپ نے فائل کو ہاتھ ہی نہیں لگایا،عدالت جو پوچھتی ہے آپ کے پاس جواب نہیں ہوتا۔

یہ بتائیں شہباز کی ضمانت کے خلاف اپیل واپس کیوں لی،بتائیں شہباز شریف وزیر اعلیٰ تھے یا حمزہ شہباز،بتائیں آپ کا کیس کیا ہے، جسٹس مظاہر علی نقوی نے یہ بھی استفسار کیا کہ کیس کی تفتیش کس نے کی،انہوں نے کہا کہ کیس کی تفتیش پر آپ کو پرائیڈ آف پرفارمنس ملنا چاہئیے۔ جس کے بعد عدالت مسلم لیگ ن کے رہنما حمزہ شہباز کی ضمانت منظور کر لی۔

جب کہ آمدن سے زائد اثاثہ جات کیس میں حمزہ شہباز کی ضمانت کی درخواست پر سماعت 11 فروری تک ملتوی کی گئی۔ خیال رہے کہ نیب نے احتساب عدالت میں رپورٹ جمع کروائی تھی جس میں کہا گیا تھا کہ شہبازشریف فیملی نے اپنے مختلف ملازموں کے ناموں پرکمپنیاں بنا رکھی ہیں،منی لانڈرنگ کی رقوم بے نامی کمپنیوں میں منتقل کی جاتی رہیں ،اور ان بے نامی کمپنیوں سے شریف فیملی کے اکاونٹس میں رقم منتقل ہوتی رہی۔

نیب رپورٹ کے مطابق شہبازشریف فیملی کو 10 کمپنیوں سے 37 کروڑبھیجے گئے۔ نیب رپورٹ میں مزید کہا گیا کہ نیب کو 10 غیرملکی منی ایکس چینجرزکا ریکارڈمل چکاہے، شہبازشریف، حمزہ،سلمان کوبرطانیہ کی 4 منی ایکس چینج سے رقوم منتقل ہوئیں، دبئی کی 6 منی ایکس چینج سے بھی رقوم منتقل کی گئیں۔