پنجاب حکومت کی نوازشریف کوآخری وارننگ

لاہور(اردو نیوز) پنجاب حکومت کی جانب سے ایک مرتبہ پھر سابق وزیراعظم نوازشریف کی میڈیکل رپورٹس کو جعلی قرار دیتے ہوئے آخری وارننگ جاری کر دی گئی ہے۔ محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے کہا گیا ہے کہ اگر 3 دن میں رپورٹس جمع نہ کروائی گئی تو بغیر کسی انتظار کے فیصلہ سنا دیا جائے گا۔پنجاب حکومت کی جانب سے کہا گیا ہے کہ ہم نے نوازشریف کو درست رپورٹس بھیجنے کے لئے خط8 دن پہلے لکھا تھا لیکن آج تک اس کا ہمیں کوئی جواب نہیں ملا۔

اگر اگلے 3 دن تک ہمیں رپورٹس نہ بھجوائی گئی تو ہم اپنا فیصلہ سنا دیں گے۔واضح رہے کہ 23دسمبر کو نوازشریف کی جانب سے ضمانت میں توسیع کی درخواست دی گئی تھی جس کے بعد بار بار پنجاب حکومت کی جانب سے میڈیکل رپورٹس کا مطالبہ کیا گیا ۔

لیکن اب محکمہ داخلہ پنجاب کی جانب سے کہا گیا ہے کہ نوازشریف کو 3 بار رپورٹس بھیجنے کا کہہ چکے ہیں، لیکن اگر ابھی بھی اگلے3 دنوں میں ان کی جانب سے رپورٹس جاری نہ کی گئی تو ہم اپنا فیصلہ سنا دیں گے۔

رپورٹس جمع کرواتے ہوئے پنجاب حکومت کی جانب سے نوازشریف کو آخری وارننگ دی گئی ہے۔محکمہ داخلہ کی جانب سے میڈیا کو بتایا گیا ہے کہ جاری کردہ رپورٹس میں پلیٹ لیٹس کا ذکر نہیں کیا گیا اور نہ ہی سی بی سی، بو ن میرو اور پی ای ٹی سکین کے بارے میں کچھ بتایا گیا ہے۔یاد رہے کہ حکومت پنجاب کی جانب سے پہلے بھی جاری کردہ رپورٹس کو جعلی قرار دیا گیا ہے جس کے بعد متعدد بار سابق وزیراعظم نوازشریف سے ان کی میڈیکل رپورٹس پیش کرنے کا مطالبہ کیا گیا ہے۔

محکمہ داخلہ کی جانب سے موقف اپنایا گیا ہے کہ ایک مہینے سے زیادہ ہو گیا ہے لیکن نوازشریف کی جانب سے کس قسم کا کوئی جواب نہیں مل رہا، اگر ایسا ہی رہا تو ہم اگلے3 دنوں میں اپنا فیصلہ سنانے پر مجبور ہوں گے۔پنجاب حکومت کی جانب سے نوازشریف کو آخری وارننگ جاری کرتے ہوئے رپورٹس جمع کروانے کا حکم جاری کیا ہے۔