پی ٹی آئی رُکن قومی اسمبلی عالمگیر خان کو گرفتار کرلیا گیا

کراچی (اُردو نیوز) پولیس نے فکس اٹ کے بانی اور پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی عالمگیر خان کو گرفتار کر لیا ۔ کلفٹن تین تلوار میں وزیر بلدیات کے دفتر کے سامنے احتجاج جاری تھا۔ فکس اٹ کے کارکنان احتجاج کر رہے تھے کہ پیپلز پارٹی کے کارکنان بھی پہنچ گئے۔تفصیلات کے مطابق کراچی کے علاقہ کلفٹن میں وزیر بلدیات سندھ کے دفتر کے سامنے احتجاج کے دوران فکس اٹ اور پیپلزپارٹی کے کارکنان کے درمیان جھگڑا ہوا، اتنے میں عالمگیر خان پریس کانفرنس کے لیے تین تلوار پہنچے تھے، عالمگیر خان کو انتظامیہ نے پریس کانفرنس کی اجازت نہیں دی تھی۔

کارکنان کے مابین جھگڑا ہونے پر پولیس نے موقع پر پہنچ کر متعدد کارکنان گرفتار کرلیے جبکہ 2 پولیس اہلکار زخمی بھی ہوئے۔ پولیس نے عالمگیر خان کو 4 کارکنان سمیت گرفتار کر لیا جبکہ پیپلز پارٹی کے کارکنان کو بھی حراست میں لیا گیا ہے۔ اس حوالے سے ایس پی کلفٹن کا کہنا ہے کہ پولیس پہلے سے موجود تھی، فکس اٹ کے کارکنوں کو کشیدگی سے منع کیا تھا، دونوں اطراف کے کچھ کارکنان کو حراست میں لیا ہے۔

پولیس نہ ہوتی تو زیادہ تصادم ہوسکتا تھا، دونوں جماعتوں کو مظاہرہ ختم کرنے کہا، پیپلزپارٹی کے کارکنان وزیر بلدیات سندھ کے دفتر کے باہر سے منتشر کردیا گیا۔ایس پی شیراز نذیر نے کہا کہ فکس اٹ کے کارکنان احتجاج کرنے پہنچے تھے، پیپلزپارٹی والوں کے کارکنان بھی یہاں موجود تھے، تصادم میں دونوں جانب کے لوگ زخمی ہوئے ہیں۔