پاکستان کے اہم ترین علاقے میں نواز شریف کی انتہائی پر تعیش خفیہ رہائش گاہ کا انکشاف

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک )پاکستان کے اہم ترین علاقے میں نواز شریف کی انتہائی پر تعیش خفیہ رہائش گاہ کا انکشاف ،سابق وزیر اعظم وہاں کیا کام کیا کرتے تھے ، بہت بڑا دعویٰ کر دیا گیا ۔۔ وزیراعظم کے معاون خصوصی نعیم الحق نے کہا ہے کہ سابق وزیراعظم نوازشریف کی زیراستعمال خفیہ سرکاری رہائش کا انکشاف ہو اہے، نوازشریف اور فیملی پچھلے پانچ سال تک خوبصورت جنگلات میں گھری اس رہائشگاہ کو استعمال کرتے رہے، حکومت پنجاب کی ملکیت ریسٹ ہاؤس پر کروڑوں روپے لگا کر لگژری بنایا گیا۔ انہوں نے ٹویٹر پر اپنے ٹویٹ میں سابق وزیراعظم نواز شریف اور ان کی فیملی کے زیراستعمال ایک سرکاری ریسٹ ہاؤس کی تصویر شیئر کی ہے۔ نعیم الحق نے کہا کہ نوازشریف سے متعلق ایک اور انکشاف ہوا ہے ۔ کہ نوازشریف اور فیملی پچھلے پانچ سال تک بھوربن میں خوبصورت جنگلات میں گھری اس رہائشگاہ کو استعمال کرتے رہے۔

یہ ریسٹ ہاؤس پنجاب حکومت کی ملکیت ہے۔ حکومت پنجاب نے اس ریسٹ ہاؤس پر کروڑوں روپے لگا کر اس کو نوازشریف اور فیملی کیلئے پرتعیش اور لگژری بنایا۔ لیکن اس رہائش گاہ کو خفیہ رکھا گیا۔ یہاں پر کسی کو آنے یا رہنے کی اجازت نہیں ہوتی تھی۔ جنگلات میں گھری خوبصورت رہائش میں صرف سابق وزیراعظم نوازشریف اور ان کی فیملی رہائش اختیار کرتے تھے۔ دوسری جانب ٹویٹر صارفین نے اس پر دلچسپ ٹویٹ کیے ہیں۔صارفین نے وزیراعظم عمران خان کو ریسٹ ہاؤس میں رہنے پر شدید تنقید کا نشانہ بنایا۔کہ کیا عمران خان ریسٹ ہاؤس میں رہنے کا بل جیب سے دیتا ہے؟ دوسری جانب واضح رہے سابق وزیراعظم نواز شریف العزیزیہ ریفرنس کیس میں کوٹ لکھپت جیل میں قید ہیں، ان کو چھ ہفتوں کی صحت کی بنیاد پر ضمانت دی گئی تھی لیکن ان کو عدالت نے ضمانت میں مزید توسیع نہ مل سکی اور ان کی ضمانت ختم ہونے پر ان کو دوبارہ جیل میں جانا پڑا۔