کوئٹہ میں نماز تراویح کے وقت مسجد کے باہر دھماکہ، 2 افراد شہید ہوگئے

کوئٹہ (اردو نیوز) کوئٹہ میں نماز تراویح کے وقت مسجد کے باہر دھماکہ، 2 افراد شہید ہوگئے، دھماکہ بلوچستان کے دارالحکومت کے علاقے سیٹلائٹ ٹاون میں واقع مسجد کے باہر کھڑی پولیس وین کے قریب ہوا، دھماکہ ریموٹ کنٹرول بم کے ذریعے کیا گیا، 4 افراد شدید زخمی حالت میں ہسپتال منتقل۔ تفصیلات کے مطابق دشمن پاکستان کو ایک مرتبہ پھر نقصان پہنچان کیلئے سرگرم ہوگئے ہیں۔

چند ہی دنوں میں دہشت گردی کے پے درپے واقعات پیش آئے ہیں۔ پہلے لاہور میں داتا دربار کے قریب پولیس اہلکاروں کی گاڑی کو نشانہ بنایا گیا جس میں کئی اہلکار شہید ہوئے۔ جبکہ پھر بلوچستان کے ساحلی شہر گوادر میں واقع نجی ہوٹل کی عمارت کو نشانہ بنایا گیا۔ اب پھر سے دہشت گردوں کی جانب سے بلوچستان کے ایک شہر کو دہشت گردی کا نشانہ بنایا گیا ہے۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق صوبہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ میں دھماکہ ہوا ہے۔ دھماکہ بلوچستان کے دارالحکومت کوئٹہ کے مصروف علاقے سیٹلائٹ ٹاون میں ہوا۔ دھماکہ سیٹلائٹ ٹاون میں واقع ایک مسجد کے باہر کھڑی ایک پولیس وین کے قریب ہوا جس سے پولیس وین کو شدید نقصان پہنچا۔ دھماکہ عین اس وقت ہوا جب مسجد میں نماز تراویح ادا کی جا رہی تھی۔

دھماکے کے باعث پولیس وین میں موجود پولیس اہلکاروں سمیت 6 افراد شدید زخمی ہوئے۔ تاہم افسوسناک طور پر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے 2 زخمی افراد شہید ہوگئے۔ دھماکے کے نتیجے میں زخمی ہونے والے دیگر 4 افراد کو فوری ہسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔ جبکہ پولیس اور دیگر سیکورٹی فورسز نے ہنگامی طور پر علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کر دیا ہے۔

بتایا جا رہا ہے کہ دھماکہ ممکمہ طور پر موٹر سائیکل میں نصب کیے گئے ریمورٹ کنٹرول بم کے ذریعے کیا گیا۔ دھماکے کا مقصد پولیس وین کو نقصان پہنچانا تھا۔ بلوچستان کے وزیر داخلہ نے دھماکے کے نتیجے میں 2 افراد کی شہادت کی تصدیق کر دی ہے۔