وہی ہوا جس کا ڈر تھا ۔۔۔ کابینہ میں اکھاڑ بچھار کا رد عمل شروع ، اہم ترین وزیر نے بغاوت کر دی

اسلام آباد(ویب ڈیسک) ایوان بالا کے رکن اعظم خان سواتی نے ہفتہ کو ایوان میں وفاقی وزیر کا حلف تو اُٹھالیا لیکن تمام تر کوشش کے باوجود اُنہیں اپنی پسندیدہ سابقہ وزارت سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کا قلمدان نہیں مل سکا۔روزنامہ جنگ کے ذرائع کے مطابق سینیٹر اعظم سواتی جو اس سے پہلے بھی دو مرتبہ سائنس اینڈ ٹیکنالوجی کے وزیر رہ چکے ہیں اُن کی پوری کوشش

تھی کہ اس مرتبہ بھی اُنہیں اُن کی سابقہ وزارت مل جائے لیکن وزیراعظم عمران خان نے اُن کی اس درخواست کو اہمیت نہیں دی تھی اور اُنہیں پارلیمانی اُمور کی وزارت پر اتفاق کرنا پڑا۔یادرہے کہ سائنس و ٹیکنالوجی کی وزارت کا قلمدان سابق وزیراطلاعات فواد حسین چوہدری کو سونپا گیا جبکہ فواد چوہدری کی جگہ ڈاکٹرفردوس عاشق اعوان نے لے لی ۔ وزیر اعظم عمران خان نے چیئرمین پی سی بی کو ”تبدیلیاں“لانا جاری رکھنے کی ہدایت کردی۔

کوئٹہ میں گورننگ بورڈ کا اجلاس غیرمعمولی ثابت ہوا اور 5 ارکان نے ڈومیسٹک کرکٹ میں مجوزہ تبدیلیوں اور ایم ڈی وسیم خان کے تقرر پر احتجاج کرتے ہوئے بائیکاٹ کر دیا، انھوں نے اپنی دستخط شدہ قرارداد بھی میڈیا کے سامنے پیش کی جس میں ایم ڈی کی تقرری کو کالعدم قرار دیا گیا ، بورڈ نے نامناسب رویے پر اگلے روز ایک رکن نعمان بٹ کو معطل کر دیا۔اس دوران ایسی اطلاعات آئیں کہ وزیر اعظم عمران خان نے چیئرمین پی سی بی احسان مانی پر اظہار برہمی کرتے ہوئے انھیں میٹنگ کیلئے طلب کر لیا ہے تاہم پی سی بی ذرائع کا یہ موقف رہاکہ یہ ملاقات کافی پہلے سے طے تھی، گذشتہ روز قومی ورلڈکپ سکواڈ

نے وزیر اعظم سے ملاقات کی تو اس وفد میں احسان مانی بھی شامل تھے۔واپس جانے سے قبل چیئرمین پی سی بی کی خواہش پر عمران خان نے ان سے اکیلے میں 5 منٹ تک گفتگوکی، اس موقع پر بورڈ کے سرپرست اعلیٰ نے احسان مانی سے کہا کہ وہ ”تبدیلیاں“ لانا جاری رکھیں اور ان کے ہر اقدام کو مکمل حمایت حاصل رہے گی۔ذرائع نے مزید بتایا کہ احسان مانی نے کسی کی ”بلیک میلنگ“ میں نہ آتے ہوئے مجوزہ تبدیلیوں پر عملدرآمدکرنے کا فیصلہ کرلیا ہے،ادھر ”باغی گروپ“ میں بھی پھوٹ پڑ چکی اور بعض نے اعلیٰ حکام سے رابطہ کر کے اپنے رویے پر پشیمانی ظاہر کی ہے،انکا کہنا تھا کہ بغیرپڑھے قرارداد پر دستخط کیے، بعد میں اندازہ ہوا کہ ایسا نہیں کرنا چاہیے تھا، بورڈ نے ایک رکن کیخلاف تو ایکشن لے لیا دیگرکو بھی شوکاز نوٹس جاری کیے جائیں گے، ذرائع کے مطابق نئے ڈومیسٹک سسٹم سے بہت سے افراد کے مفادات کو ضرب پہنچے گی اس لیے وہ احتجاج کریں گے، حکام نے فیصلہ کر لیا ہے کہ وہ کسی کے دباؤ میں نہیں آئیں گے اور وسیم خان کی بطورایم ڈی تقرری کا فیصلہ بھی تبدیل نہیں ہوگا، بورڈ کئی آپشنز پر غور کر رہا ہے، البتہ ان

میں سے کوئی بھی ایسا نہیں جس سے ”باغی گروپ“ کے سامنے جھکنے کا تاثر سامنے آئے،وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے بھرپور سپورٹ نے بورڈحکام کے حوصلے مزید توانا کر دیے ہیں۔ حکام نے فیصلہ کر لیا ہے کہ وہ کسی کے دباؤ میں نہیں آئیں گے اور وسیم خان کی بطورایم ڈی تقرری کا فیصلہ بھی تبدیل نہیں ہوگا، بورڈ کئی آپشنز پر غور کر رہا ہے، البتہ ان میں سے کوئی بھی ایسا نہیں جس سے ”باغی گروپ“ کے سامنے جھکنے کا تاثر سامنے آئے،وزیر اعظم عمران خان کی جانب سے بھرپور سپورٹ نے بورڈحکام کے حوصلے مزید توانا کر دیے ہیں۔