پرانی نیب کی چھٹی ۔۔ ، حکومت نے نیب قوانین بدلنے کا حتمی اعلان کردیا

اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) پرانی نیب کی چھٹی، حکومت نے نیب قوانین بدلنے کا حتمی اعلان کردیا، وفاقی وزیر قانون فروغ نسیم کا کہنا ہے کہ نیب قوانین میں ترمیم 100 روز گزرنے کے بعد ہو گی، نیب اور فوجداری قوانین میں ترمیم کے معاملے کو سو روزہ پلان سے الگ کر دیا گیا ہے، نیب اختیارات کے غلط استعمال کو روکنے کے ساتھ ای سی ایل قانون بھی بدلا جائے گا۔ تفصیلات کے مطابق وزیر قانون فروغ نسیم نے کہا ہے ۔

کہ نیب اور فوجداری قوانین میں ترمیم کے معاملے کو سو روزہ پلان سے الگ کر دیا گیا ہے، نیب اختیارات کے غلط استعمال کو روکنے کے ساتھ ای سی ایل قانون بھی بدلا جائے گا۔ نیب اور فوجداری قوانین میں ترمیم، 100روزہ پلان کے مطابق پیشرفت نہ ہو سکی۔ وزیر قانون فروغ نسیم آنے والے دنوں میں ترامیم کے لیے پُرعزم ہیں، انہوں نے نیب اور فوجداری قوانین میں ترمیم کو وقت کی ضرورت قرار دیا ہے۔

اس حوالے سے وزیر قانون فروغ نسیم نے مزید کہا کہ سپریم کورٹ کے فیصلے کی روشنی میں نیب اور فوجداری قوانین میں ترمیم کی جائے گی لیکن اس کے لیے وقت درکار ہے۔ ایف آئی آر کے اندراج اور تفتیش کے لیے وکلا کی خدمات لی جا سکتی ہیں۔ فروغ نسیم نے کہا کہ نیب اختیارات کے غلط استعمال کو روکنے کے ساتھ ای سی ایل قانون بھی بدلا جائے گا۔ وزیر قانون کا کہنا تھا ۔

کہ پہلے سو روز میں سول قوانین میں ترامیم کا ٹارگٹ حاصل کر لیا گیا ہے۔واضح رہے کہ نیب کے قوانین میں تبدیلی کے حوالے سے اپوزیشن جماعتیں بھی حکومت پر مسلسل دباو ڈال رہی ہیں۔ اپوزیشن جماعتوں مسلم لیگ ن اور پاکستان پیپلز پارٹی کا کہنا ہے کہ حکومت نیب قوانین میں تبدیلی کا بل پارلیمنٹ میں لائے، اپوزیشن جماعتیں اس حوالے سے حکومت کی حمایت کریں گی۔