معروف ترقی پسند شاعرہ و مصنفہ فہمیدہ ریاض طویل علالت کے بعد انتقال کرگئیں

ممتاز شاعرہ و مصنفہ فہمیدہ ریاض طویل علالت کے بعد انتقال کرگئیں ۔ میڈ یا رپورٹس کے مطابق فہمیدہ ریاض گزشتہ چند ماہ سے بیمار تھیں ۔ فہمیدہ ریاض 28 جولائی 1945 کو میرٹھ میں پیدا ہوئیں اور طالب علمی کے زمانے میں حیدرآباد میں پہلی نظم لکھی جو ” فنون“ میں چھپی ۔ فہمیدہ ریاض کا پہلا شعری مجموعہ ” پتھر کی زبان “ 1967 میں آیا اور ان کا دوسرا مجموعہ ’بدن دریدہ‘ 1973 میں ان کی شادی کے بعد انگلینڈ کے زمانہ قیام میں شائع ہوا جب کہ تیسرا مجموعہ ’کلام دھوپ‘ تھا ۔ فہمیدہ ریاض نیشنل بک فاونڈیشن اسلام آباد کی سربراہ بھی رہیں ، وہ جنرل ضیاء الحق کے دور میں بھارت چلی گئیں اور ضیا الحق کے انتقال کے بعد پاکستان واپس آئیں ۔ فہمیدہ ریاض نے جمہوریت اور خواتین کے حقوق کیلئے بھرپور جدوجہد کی ۔