ڈالر کی مکمل چھٹی۔۔ پاکستان اور چین کس کرنسی میں تجارت کریں گے۔۔ تاریخی فیصلہ ہو گیا، شاندار خبر آگئی

اسلام آباد (نیوز ڈیسک ) پاکستان اور چین نے مشترکہ اعلامیہ میں پاکستانی روپے اور چینی یوآن میں تجارت کرنے کا اعلان کردیا۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان اس وقت سرکاری دورے پر چین میں موجود ہیں جہاں وہ چینی حکام کے ساتھ ملاقاتوں کے علاوہ مقامی سرمایہ کاروں سے بھی مل رہے ہیں تاکہ پاکستان میں سرمایہ کاری کے لیے راہ ہموار کی جائے۔اس حوالے سے تازہ ترین خبر یہ ہے کہ وزیر اعظم عمران خان کے دورہ چین کے دوران ہونے والے پاک چین مذاکرات کا مشترکہ اعلامیہ جاری کر دیا گیا ہے۔

اس حوالے سے مشترکہ اعلامیہ میں سب سے بڑا اعلان یہ کیا گیا ہے کہ پاکستان اور چین ،ڈالر کی بجائے اپنی اپنی کرنسی میں تجارت کریں گے۔یوں دونوں ممالک ڈالر کی بجائے پاکستانی روپے اور چینی یوآن میں تجارت کریں گے یوں پاکستان کو ڈالر کے حالیہ بحران سے بھی نکلنے میں مدد ملے گی اور ڈالر کی اجارہ داری بھی ختم ہوئی۔اس کے علاوہ مشترکہ اعلامیے کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے چینی قیادت کودورہ پاکستان کی دعوت دی جو قبول کرلی گئی۔

وزیراعظم کےدورہ چین کےموقع پردونوں ملکوں میں 15معاہدوں پر دستخط ہوئے،اعلامیے میں یہ بھی کہا گیا ہے کہ تمام ممالک یواین جنرل اسمبلی،سیکیورٹی کونسل کی دہشتگردی سے متعلق قراردادوں پرعملدر آمد کی پابند ہیں۔مذاکرات کے دوران پاکستان اور چین میں اتفاق طے پایا ہے کہ عالمی دہشتگردی سے متعلق جامع کنونشن کا اتفاق رائے سے مسودہ تیارکیا جانا چاہیے جسکے تحت تمام ممالک یو این پابندیوں کے معاملات کو سیاسی مقاصد کیلیے استعمال کرنے سے باز رہیں۔

اعلامیہ کے مطابق چین پاکستان کی شنگھائی کو آپریشن آرگنائزیشن میں شمولیت کا خیرمقدم کرتا ہے۔دونوں ملک عالمی اورعلاقائی معاملات پر مشترکہ تعاون،رابطوں کومربوط بنائیں گے۔یواین سمیت تمام عالمی فورمز پر باہمی رابطوں کو مزید مضبوط بنایا جائےگا۔اس بات پر بھی اتفاق پایا گیا ہے کہ مشترکہ مقاصد کےحصول کیلیےقانون کی حکمرانی اور طویل المدتی جامع رولز بنائے جائیں گے۔