ترکی کے صدر کی پاکستان آمد اب تک کی سب سے بڑی خبر آگئی

نقرہ(آئی این پی ) ترک صدر طیب اردگان نے صدر پاکستان کی دعوت پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سے برادرانہ اور دیرینہ تعلقات قائم ہیں، امید ہے کہ نئی حکومت کے دوران یہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے، نئی قیادت میں پاکستان کے ساتھ باہمی تعاون کو مزید فروغ بھی حاصل ہوگا۔ تفصیلات کے مطابق صدر پاکستان عارف علوی نے ترک صدر طیب اردگان سے انقرہ میں صدارتی دفتر میں ملاقات کی۔

ملاقات کے دوران دونوں رہنماوں کے درمیان دو طرفہ دلچسپی کے باہمی امور اور خطے کو درپیش تازہ صورت حال پر تبادلہ خیال کیا گیا۔صدر پاکستان ڈاکٹرعارف علوی نے ترکی کے 95 ویں یوم جمہوریہ کے موقع پر خصوصی تقریب میں شرکت کے لیے مدعو کرنے پر ترک صدر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں دورہ پاکستان کی دعوت دی۔ صدر پاکستان نے آزادانہ تجارتی معاہدے اور دوطرفہ تجارت میں اضافے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ترک صدر طیب اردگان نے صدر پاکستان کی دعوت پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سے برادرانہ اور دیرینہ تعلقات قائم ہیں۔ امید ہے کہ نئی حکومت کے دوران یہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے، نئی قیادت میں پاکستان کے ساتھ باہمی تعاون کو مزید فروغ بھی حاصل ہوگا۔

قبل ازیں ترک کو میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے صدر پاکستان عارف علوی نے کہا کہ پاکستان اور ترکی نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے پناہ قربانیاں دی ہیں اور اب دنیا کو دونوں ملکوں کی قربانیوں اور کاوشوں کا اعتراف کرنا چاہئے۔ترکی کے 95 ویں یوم جمہوریہ کے موقع پر خصوصی تقریب میں شرکت کے لیے مدعو کرنے پر ترک صدر کا شکریہ ادا کرتے ہوئے انہیں دورہ پاکستان کی دعوت دی۔ صدر پاکستان نے آزادانہ تجارتی معاہدے اور دوطرفہ تجارت میں اضافے کی ضرورت پر بھی زور دیا۔ترک صدر طیب اردگان نے صدر پاکستان کی دعوت پر شکریہ ادا کرتے ہوئے کہا کہ پاکستان سے برادرانہ اور دیرینہ تعلقات قائم ہیں۔ امید ہے کہ نئی حکومت کے دوران یہ تعلقات مزید مستحکم ہوں گے، نئی قیادت میں پاکستان کے ساتھ باہمی تعاون کو مزید فروغ بھی حاصل ہوگا۔قبل ازیں ترک کو میڈیا کو انٹرویو دیتے ہوئے صدر پاکستان عارف علوی نے کہا کہ پاکستان اور ترکی نے دہشت گردی کے خلاف جنگ میں بے پناہ قربانیاں دی ہیں اور اب دنیا کو دونوں ملکوں کی قربانیوں اور کاوشوں کا اعتراف کرنا چاہئے۔