صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی ترک صدر رجب طیب اردگان کی دعوت پر ترکی پہنچ گئے

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی ترکی پہنچ گئے ، ائیرپورٹ پر ترکی کے اعلیٰ حکام نے استقبال کیا ، اتاترک ائیرپورٹ پر ترک فوج کے چاق و چوبند دستے نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کو گارڈ آف آنر پیش کیا ۔ نجی ٹی وی کے مطابق صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی ترک صدر رجب طیب اردگان کی دعوت پر تین روزہ دورے پر ترکی پہنچ گئے ہیں ، اتاترک ائیرپورٹ پر ترکی کے اعلیٰ حکام نے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا استقبال کیا جبکہ ترک فوج کے چاق و چوبند دستے نے صدر مملکت کو گارڈ آف آنر بھی پیش کیا ۔

صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی ترکی کے تین روزہ دورے کے موقع پر اپنے ترک ہم منصب رجب طیب اردگان سمیت ترکی کے اعلیٰ حکام سے ملاقاتیں کریں گے ۔ اس سے قبل پاکستان سے روانہ ہوتے وقت میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے اسرائیل کے ساتھ کسی بھی قسم کے تعلق کے امکان کو مسترد کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسرائیل کے ساتھ کسی قسم کے تعلقات استوار نہیں کیے جا رہے اور نہ ہی ایسی کوئی بات زیر غور ہے ۔ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی کا کہنا تھا کہ اسرائیل کے ساتھ تعلقات کی نہ کوئی تجویز زیر غور آئی ہے نہ اسرائیل کے ساتھ تعلقات استوار کیے جا رہے ہیں ۔

انہوں نے کہا کہ کشمیر اور غزہ کا معاملہ ایسا ہے کہ تاریخی اعتبار سے پاکستان فلسطین کا ساتھ دیتا ہے اور غزہ اور کشمیر کے اندر سب سے بڑی چیز ہے جو میڈیا کے اندر آپ محسوس بھی کرسکتے ہیں کہ وہ یہ کہ جو کچھ بھی غزہ اور کشمیر میں مظالم ہو رہے ہیں وہ دنیا کو بتائے بھی نہیں جاتے ، اس معاملے پر کسی بحث کی ضرورت نہیں کیونکہ یہ رپورٹ دینے والے خود بھی اس معاملے پر مطمئن نہیں ۔ واضح رہے کہ گذشتہ دو روز کے دوران سوشل اور الیکٹرانک میڈیا پر اسرائیلی طیارے کی پاکستان آمد کی خبر گردش کرنے کے بعد وفاقی وزیر اطلاعات فواد چوہدری اور سول ایوی ایشن اتھارٹی نے ایسی تمام خبروں کو مسترد کیا تھا ۔

تاہم متحدہ مجلس عمل کے سربراہ مولانا فضل الرحمن بضد تھے کہ اسرائیلی طیارے کے روٹ کے مطابق وہ پاکستان آیا اور یہاں 10 گھنٹے گزارے لیکن حکومت نے واضح جواب دینے کے بجائے تکنیکی معاملات میں الجھانے کی کوشش کی ہے جسے مسترد کرتے ہیں ، اسرائیل کا مقصد ہوسکتا ہے کہ پاکستان کو اسلحہ بیچے ۔ انہوں نے کہا کہ میں نے الیکشن سے پہلے ہی کہہ دیا تھا کہ اگر پی ٹی آئی کی حکومت بنی تو وہ یہودی نواز حکومت ہوگی ۔ یاد رہے کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی ترک صدر رجب طیب اردگان کی دعوت پر تین روزہ دورے پر ترکی پہنچ چکے ہیں ۔