اس سیاستدان نے میری بہت ہمت بندھائی تھی، اس لئے مجھے یہ آج تک پسند ہے فاروق بندیال کی زیادتی اور ڈکیتی کا واقعہ منظر عام پر آنے کے بعد اداکارہ شبنم کا حیران کن بیان سامنے آگیا

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ روز فاروق بندیال کی تحریک انصاف میں شمولیت کی خبروں نے سوشل میڈیا پر کہرام برپاکردیا ۔ فاروق بندیال کو تحریک انصاف میں شامل کرنے کا اعلان 24گھنٹوں بعد ہی واپس لیا گیا اور اس کی وجہ 80کی دہائی میں ان کا زیادتی اور ڈکیتی کے ایک مقدمے میں نامز د ہونا تھا ۔ یہ افسوسناک واقعہ ماضی کی معروف فلمی اداکارہ شبنم کے ساتھ پیش آیا تھا ۔ اب اس بارے میں اداکارہ شبنم کا بھی موقف سامنے آگیا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پاکستانی حکمرانوں میں سب سے زیادہ ضیا الحق پسند تھے، جب میرے گھر پر ڈاکہ پڑا تو ضیاء الحق نے بہت حوصلہ دیا اور قاتلوں کو انجام تک پہنچانے کا وعدہ کیا تھا۔

اداکارہ شبنم نے کہا ہے کہ انہیں پاکستانی حکمرانوں میں مجھے ضیا الحق بہت پسند تھے تاہم ایوب خان اور بھٹو بھی کسی حد تک پسند تھے جس دور میں میرے گھر پر ڈاکہ پڑا تو ضیا الحق نے ہم کو بہت حوصلہ دیا اور کہا کہ وہ ڈاکوئوں کو کسی صورت نہیں چھوڑیں گے۔ یاد رہے کہ برسوں بعد ملک فاروق بندیال جو کہ شبنم کیس کا ایک مرکزی کردار تھے کی تحریک انصاف میں شمولیت نے ایک بار پھر اس مشہور کیس کی یاد تازہ کر دی ہے جو 1980 کی دہائی میں ہوا تھا اور اس کیس کے ملزمان جو کہ جاگیرداروں اور بااثر شخصیات کے بیٹے تھے کیس میں موت کی سزا سنا دیے جانے کے باوجود دباؤ اور مختلف ہتھکنڈوں سے صلح صفائی کی وجہ سے رہا ہو گئے تھے ۔