اسرائیلی پائلٹ کی پاکستان میں کارروائی کے دوران گرفتاری آخر کار معاملے کی حقیقت کھل کر پاکستانیوں کے سامنے آگئی

اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سوشل میڈیا پر ایک پوسٹ گردش کرتی ہوئی دکھائی دے رہی ہے جس میں اسرائیلی اخبار یروشلم پوسٹ کا عکس دیکھا جا سکتا ہے جس میں دعویٰ کیا جا رہا ہے کہ فائٹر جیٹ کی تباہی کے بعد پاک فوج کی جانب سےگرفتار کیے گئے پائلٹ کو ان کا خاندان الوداع کہتا ہے ٖFamily Bids Farewell to Pilot Who [sic] Arrested by Pakistan Army After Crash [sic] the Fighter Jet اس سرخی میں گرائمر اور املا کی کئی غلطیاں ہیں جن سےصاف پتہ چل رہا ہے کہ جعلی اور من گھڑت سرخی بنا کر اسے اسرائیلی اخبار کے عکس پر فوٹو شاپ کے ذریعے لگا یا گیا ہے۔ اصل خبر کی سرخی یہ تھی اسرائیلی ایئرفورس کے حادثے میں ہلاک ہونے والے پائلٹ کو اہل خانہ نے الوداع کہا ہے۔یہ خبر 2013 میں ایک اسرائیلی ہیلی کاپٹر تباہ ہونے کے نتیجے میں ہلاک ہونے والے لیفٹیننٹ کرنل نوام رون سے متعلق ہے۔ نوام کے ساتھ اسرائیلی فضائیہ کا ایک میجر بھی مارا گیا تھا۔ پاکستان اور بھارت میں اسرائیلی فوج کے کسی لیفٹیننٹ کرنل کا رینک یہاں کے ونگ کمانڈر کے برابر ہوتا ہے۔