کس ملک کے پاس کتنے ایٹمی ہتھیار ہیں؟ نئی عالمی درجہ بندی جاری ، پاکستان کے ایٹمی ہتھیاروں میں اچانک بڑا اضافہ

فیڈریشن آف امریکن سائنٹسٹس جو کہ امریکی سائنسدانوں کی تنظیم ہے نے دنیا میں ایٹمی ہتھیاروں کی تعداد کے حوالے سے ایک نئی فہرست جاری کی ہے اس فہرست کے مطابق ایٹمی طاقت رکھنے والے ممالک کے پاس ہتھیاروں کی تعداد بہت زیادہ بڑھ چکی ہے ۔ بزنس انسائیڈر اپنی ایک رپورٹ میں کہتا ہے کہاس وقت دنیا میں سب سے زیادہ ایٹمی ہتھیار روس کے پاس ہیں جن کی تعداد 7 ہزار ہے، امریکہ 6800 ہتھیاروں کے ساتھ دوسرے نمبر پر ہے ، فرانس کے پاس 300 ایٹمی ہتھیار ، چین 270 ایٹمی ہتھیاروں کے ساتھ چوتھے نمبر پر ہے ، برطانیہ کے پاس 215 جبکہ پاکستان 140 ایٹمی ہتھیاروں کے ساتھ چھٹے نمبر پر ہے ، بھارت کے پاس 130 ایٹمی ہتھیار ، اسرائیل کے پاس 80 اور شمالی کوریا کے پاس 60 ایٹمی ہتھیار موجود ہیں ۔

فیڈریشن آف امریکن سائنٹسٹس نے اپنی رپورٹ میں کہا ہے کہ پاکستان ٹیکٹیکل نیوکلیئر ہتھیار بھی تیار کر رہا ہے جو سائز میں اس قدر چھوٹے ہیں کہ انہیں انتہائی آسانی سے میدان جنگ میں بھی استعمال کیا جا سکتا ہے، اس کے برعکس روایتی ایٹمی ہتھیار صرف شہروں یا دیگر بڑے انفراسٹرکچر پر ہی گرائے جا سکتے ہیں، پاکستان کے یہ ٹیکٹیکل ہتھیار جنگی جہازوں اور آبدوزوں کے ذریعے بھی انتہائی مختصر نوٹس پر استعمال کیے جا سکتے ہیں ، رپورٹ کا کہنا ہے کہ پاکستان نیوکلیئر ٹرائی ایڈ کی تیاری کے بھی قریب پہنچ چکا ہے جس سے وہ زمین، فضاء اور سمندر تینوں جگہوں سے ایٹمی میزائل لانچ کرنے کی صلاحیت کا حامل بن جائے گا ۔ پاکستان نے اپنا ایٹمی پروگرام بھارت کے بعد شروع کیا مگر اب وہ بھارت سے آگے نکل چکا ہے۔