ماسکو میں دنیا کا پہلا روبوٹ قحبہ خانہ کھول دیا گیا ، روبوٹ کال گرلز دستیاب ہوں گی

روس میں فیفا ورلڈ کپ 2018ء کے آغاز سے قبل ہی دارلحکومت ماسکو میں دنیا کا پہلا روبوٹ قحبہ خانہ کھول دیا گیا ہے ۔ ٹائمز آف انڈیا کے مطابق ڈولز ہوٹل کے نام سے یہ قحبہ خانہ روسی دارالحکومت کے بزنس ڈسٹرکٹ میں قائم کیا گیا ہے جہاں ورلڈ کپ دیکھنے کے لئے آنے والے غیر ملکی مہمانوں کے لئے روبوٹ لڑکیوں کا اہتمام کیا گیا ہے ۔ اس قحبہ خانے کو روسی حکومت کی جانب سے قانونی تحفظ حاصل ہے اور یہاں آنے والے کسٹمر 24 سے 40 ڈالر میں روبوٹ جنسی گڑیاﺅں کے ساتھ وقت گزارسکیں گے ۔

قحبہ خانے کی انتظامیہ کا کہنا ہے کہ ان کی جنسی گڑیائیں مصنوعی جنسی ذہانت سے لیس ہیں ۔ وہ حقیقی خواتین کی طرح جذبات کا اظہار کرسکتی ہیں اور گاہکوں کے ساتھ ان کا میل جول اور برتاﺅ بھی حقیقی خواتین جیسا ہوگا ۔ قحبہ خانے کے مالک دمتری الیگزینڈروف سے جب پوچھا گیا کہ انہیں روبوٹ جنسی گڑیاﺅں کا قحبہ خانہ قائم کرنے کا خیال کیونکر آیا تو ان کا کہنا تھا ” یہ جنسی زندگی کو بہتر بنانے کا ایک محفوظ طریقہ ہے اور یہاں اسے قانونی تحفظ بھی حاصل ہے ۔ میرا خیال ہے کہ اس میں کو ئی حرج نہیں بلکہ میں تو یہ کہوں گا کہ جسم فروش خواتین کے استحصال او ران پر تشدد کے مسئلے کا بھی یہی حل ہے کہ قحبہ خانوں میں حقیقی خواتین کی بجائے روبوٹ گڑیائیں استعمال کی جائیں ۔“