جاپان کمپنی نے کورونا کی 15 منٹ میں تشخیص کرنے والی اسٹرپ تیار کرلی

لاہور (اردو نیوز) جاپان میں کورونا وائرس کی15 منٹ میں تشخیص کرنے والی اسٹرپ تیار کرلی گئی، جاپانی کمپنی نے یہ اسٹرپ چینی کمپنی کے تعاون سے تیار کی، تاہم ابھی کورونا وائرس کی تشخیص کا جدید ترین طریقہ 6 سے 8 گھنٹے کا وقت لیتا ہے۔ تفصیلات کے مطابق کورونا وائرس نے دنیا بھر کو خوف میں مبتلا کردیا ہے، جس کے باعث دنیا کے مختلف ممالک میں کورونا وائرس سے بچاؤ اور اس سے نمٹنے کی تیاری بھی کی جاری ہے۔

کورونا وائرس سے نمٹنے کیلئے جاپانی ماہرین نے ایک اسٹرپ تیار کی ہے، جس کی مدد سے کورونا وائرس کی صرف 15منٹ میں تشخیص ممکن ہے۔ بتایا گیا ہے کہ جاپانی کمپنی نے یہ اسٹرپ چینی کمپنی کے تعاون سے تیار کی ہے۔ ہوسکتا ہے کہ چین میں اس سے پہلے ہی اس اسٹرپ استعمال کیا جارہا ہو۔ جاپانی ماہرین کا کہنا ہے کہ یہ ایک ایسی اسٹرپ ہے جو صرف 15 منٹ میں کرونا وائرس کو تشخیص کرسکتی ہے۔

اس اسٹرپ کو استعمال کرنے کیلئے مریض کے خون کے نمونے اور ایک کیمیائی محلول کی ضرورت ہوتی ہے جن کو مکس کرنے کے بعد اس اسٹرپ پر ایک سرخ لائن ظاہر ہوتی ہے۔ اس سرخ لائن کی مدد سے کورونا کی تشخیص صرف 15 منٹ میں کی جاسکتی ہے۔ ابھی کورونا وائرس کی تشخیص کیلئے جو جدید ترین طریقہ استعمال کیا جا رہا ہے، یہ طریقہ 6 سے 8 گھنٹے کا وقت لیتا ہے۔

اسی طرح کورونا وائرس کی کم وقت میں تشخیص کیلئے ایک ماسک بھی تیار کیا جاچکا ہے۔ ماسک کے اندر نصب کی گئی تھری ڈی پرنٹڈ پٹیاں وائرس کی تشخیص میں معاون ثابت ہوں گی۔ 2 یورو کا یہ ماسک ٹیوبر کلوسس (ٹی بی) بھی تشخیص کرنے کے کام آچکا ہے۔ دوسری جانب پنجاب میں کورونا وائرس کا پہلا کیس سامنے آگیا ہے۔ وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے تصدیق کی ہے کہ 4روز قبل دبئی سے لاہور آنے والے مسافر نے شبہ ہونے پر ٹیسٹ کروایا جس کی رپورٹ مثبت آئی ہے۔

ڈاکٹر یاسمین راشد نے تصدیق کی ہے کہ مسافر نے ایک نجی لیبارٹری سے ٹیسٹ کروایا جس میں کورونا وائرس کی تصدیق ہوگئی ہے۔ متاثرہ شخص کو آئسولیش میں منتقل کردیا گیا ہے جبکہ اس کے گھر کے ملازمین اور اہلِ خانہ کے ٹیسٹ کیے جارہے ہیں۔ ڈاکٹر یاسمین راشد نے کہا ہے کہ رپورٹ آنے پر سرکاری طور پر تصدیق کریں گے۔ واضح رہے کہ گزشتہ روز اس ھوالے سے خبر آئی تھی کہ لاہور میں کوروناوائرس کا کیس سامنے آیا ہے

لیکن بعد میں ترجمان حکومتِ پنجاب نے اس کی تردید کردی تھی کہ ایسا کوئی کیس سامنے نہیں آیا ہے, ترجمان پنجاب حکومت مسرت چیمہ نے کہا تھا کہ ابھی تک پنجاب میں کورونا وائرس کے ایک بھی مریض کی تصدیق نہیں ہوئی ہے مسرت چیمہ نے اپنے ٹویٹر پیغام میں بتایا تھا کہ پنجاب میں ابھی تک 90لوگوں کا ٹیسٹ کیا گیا ہے البتہ تاحال کوئی مریض سامنے نہیں آیا ہے۔ تاہم اب وزیر صحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشد نے تصدیق کردی ہے۔ اسی طرح محکمہ داخلہ پنجاب نے صوبے بھر میں دفعہ 144نافذ کردی ہے۔