زندگی پیاری ہے تو 7 قسم کے ٹیسٹ کروانے میں کوتاہی مت کریں

عمر بڑھنے کے ساتھ ساتھ بیماریوں اورجسمانی عوارض کا شکار ہونے کا خطرہ بھی بڑھتا جاتا ہے۔ کینسر سے لے کے امراض قلب تک اور ذیابیطس سے فالج تک ہر قسم کی زندگی کیلئے خطرناک بیماری کا اس دور میں خطرہ بڑھ جاتا ہے۔ اگر آپ چاہتے ہیں کہ ان ممکنہ خطرات سے آپ کی اور آپ کے پیاروں کی زندگی بچی رہے تو سات قسم کے ٹیسٹ کروانے میں ہرگز کوتاہی مت کریں۔ بال کینسر کی سکریننگ ضرور کروانی چاہئے۔ ایک تحقیق کے مطابق چھاتی اور پھیپھڑوں کے سرطان کے علاوہ بال کینسر اموات کی بڑی وجہ ہے۔ اس سرطان میں مبتلا ‎افراد کی بڑی تعداد 60 برس سے زائد ہوتی ہے۔ درحقیقت ہر10 میں سے8 بال کینسر کے مریض 60 برس سے زائد کے ہوتے ہیں۔

برطانیہ میں اسی وجہ سے 70 برس سے زائد کے افراد کیلئے بال کینسر کی سکریننگ کو لازمی قرار دیا گیا ہے۔ سرویکل کینسر کی سکریننگ بھی یورپی ممالک میں 25 برس سے زائد کی خواتین کیلئے لازمی قرار دی گئی ہے۔ اس کیلئے سمیئر ٹیسٹ کیا جاتا ہے۔ یہ ٹیسٹ تکلیف دہ ہوسکتا ہے تاہم خواتین کو سروکس کے کینسر سے بچانے کیلئے اس ٹیسٹ کو کروانا لازمی ہے۔

کولیسٹرول اور بلڈ ٹیسٹ ہر اس شخص کیلئے ضروری ہے جس کے خاندان میں کولیسٹرول اور بلند فشار خون (بلڈپریشر) کی بیماری موجود ہے۔ اس حوالے سے یہ ذہن میں رکھنے کی ضرورت ہے کہ کولیسٹرول کی زیادتی کی کوئی علامت موجود نہیں ہے، ایسے میں کوئی بھی شخص اس بیماری کا شکار ہوسکتا ہے اور عین ممکن ہے کہ اس کے علم میں بھی نہ ہو۔ بریسٹ کینسرسکریننگ تمام خواتین کیلئے لازمی ہونی چاہئے کیونکہ اس وقت دنیا بھر میں بریسٹ کینسر خواتین میں باعث اموات بننے والی سب سے بڑی بیماری ہے۔بریسٹ کینسر کی سکریننگ میمو گرام کے ذریعے کی جاتی ہے۔

آئی ٹیسٹ کروانے کا مقصد محض آنکھوں کا نمبر چیک کروانا نہیں ہوتا ہے بلکہ اس طرح آنکھوں میں ممکنہ طور پر تمام بیماریوں کے امکانات کی نشاندہی بھی ہوسکتی ہے۔ خاص کر اگر آپ کی عمر پچاس برس سے زیادہ ہے، اور آپ بلند فشار خون یا پھر ذیابیطس کا شکار ہیں تو ایسے میں اس ٹیسٹ کا لازمی اہتمام کریں۔ اپنی جلد پر خاص توجہ دیں۔ اگر آپ کو جلد پر کوئی خاص نشان دکھائی دیتا ہے۔ تل یا مہاسوں کی تعداد غیر معمولی ہے یا پھر تیزی سے نکل رہے ہیں تو پھر معالج سے رجوع کرنے میں ہرگز دیر نہ کریں کیونکہ مختلف قسم کے کینسر کی علامت بھی ہوسکتی ہے۔‎