معاشی آزادی کی عالمی درجہ بندی جاری، پاکستان، امریکہ اور بھارت کی حیرت انگیز پوزیشن

معاشی آزادی کی عالمی درجہ بندی میں پاکستان کی دس درجے بہتری ہوگئی، 159 ممالک کی فہرست میں پاکستان کا درجہ 127 ہوگیا۔ پاکستانی معاشی تھینک ٹینک پرائم اور کینیڈین فریزر انسٹی ٹیوٹ کی تازہ رپورٹ کے مطابق پاکستان کی معاشی آزادی کی عالمی درجہ بندی میں 10 درجے بہتری آئی ہے جس کے بعد 159 ممالک کی فہرست میں پاکستان کا درجہ اب 127 تک پہنچ گیا جو گزشتہ سال 137 کے درجے پر تھا۔

رپورٹ کے مطابق درجہ بندی میں ہانگ کانگ اور سنگاپور بدستور پہلے اور دوسرے نمبر پر جبکہ امریکہ اور کینیڈا گیارہویں، جرمنی تئیسویں اور بھارت 95 ویں نمبر پر براجمان ہے۔

پاکستان کا حکومتی حجم کا 10 میں سے 7.88 کم ہوکر 7.86، لیگل سسٹم اور پراپرٹی رائٹس میں پاکستان کا اسکور 3.37 سے کم ہو کر 3.3 اور دولت تک رسائی کا اسکور 6.21 سے بڑھ کر 6.38 ہوگیا۔رپورٹ کے مطابق عالمی تجارت میں آزادی کا اسکور 5.82 سے کم ہو کر 5.77 اور کریڈٹ، لیبر اور بزنس میں قانون سازی میں اسکور 6.19 سے بڑھ کر 6.31 ہوگیا۔